کوئٹہ () پاکستان پیپلزپارٹی بلوچستان کے صوبائی میڈیا سیل انچارج حیات خان آچکزئی نے اپنے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ عمران خان نے سیاسی لوٹوں کے آسرے میں خود کو ڈبو دیا ہیں، تحریک انصاف کی بی ٹیم نے نئے وزیراعظم کے لئے شیروانی بھی تیار کروالی ہیں،نااہل حکومت ‏این آر او نہیں استعفا دیں، ‏قوم کو نااہل وزیراعظم کے استعفے کا انتظار ہیں، این آر او کا نعرہ لگانے والے خود این ار او کی بھیک مانگ رہے ہیں، چئیرمین بلاول بھٹو زرداری کی قیادت میں کارکنان متحد ہیں اور نااہل حکومت کے خلاف بھرپور احتجاج کے لئے مرکزی قیادت کی اشارے کا انتظار میں ہیں،سلیکٹڈ حکومت کی کارکردگی سیاسی انتقام تک محدود رہ گئی، ہیں،نااہل حکومت نے ایک بار پھر بجلی کے نرخ بڑھا کر عوام پر بجلی بم گرادیا ہے۔ ہر روز مہنگائی اور بے روزگاری میں اضافہ ثابت کررہا ہے کہ موجودہ حکومت عوامی نہیں، ایسا لگ رہا ہے کہ موجودہ حکمران پاکستان کے نہیں غیرملکی ہیں جنہیں عوام کے مشکلات کا کوئی احساس نہیں،علی بابا چالیس چوروں کا ٹولہ اپنے ہی انتخابی منشور کا ستیاناس کر کے صرف میڈیا کے ذریعے روزانہ کی بنیاد پر عوام کو حالات سنبھلنے کی خوش کن تسلیاں دینے میں مصروف ہیں،حالانکہ انہیں اچھی طرح معلوم ہے کہ عوام کس اذیت سے گزر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ آصف زرداری نے پاکستان کی معیشت کو مضبوط کیا، ملک کو سی پیک جیسا تحفہ دیا،ملک میں مشرف دور سے شروع دہشتگردی کا خاتمہ کیا اور امن و امان کی فضاء قائم کی، ملک جو سفارتی طور پر تنہا تھا اسکے تمام ملکوں کے ساتھ سفارتی تعلقات نہ صرف بحال کئیں بلکہ سفارتی تعلقات کو مزید مظبوط کیا اور آج ان سب کا صلہ انہیں قید وبند اور جھوٹے مقدمات کی صورت میں مل رہی ہے،آصف علی رزداری کو ذاتی معالج کی سہولت فراہم کی جا ئے,‏حکومت آصف علی زرداری کو دی جانے والی طبی سہولیات کے حوالے سے بے حسی کا مظاہرہ کررہی ہے اور انکی صحت کو خطرہ لاحق ہے،‏حکومت سیاسی انتقامی کاروائیوں میں ہمارے قائد کی صحت کے ساتھ کھیلنا بند کردیں.سابق صدر نے سیاست میں برداشت کا اصول قائم کیا ہوا ہے،انسانی بیماری پر طنز کرنے والے اخلاقی دیوالیہ کے شکار ہیں۔