پاکستان پیپلز پارٹی کے سیکرٹری جنرل سید نیر حسین بخاری نے چیئرمین نیب کی تقریر پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ چیئرمین نیب نے آج بھی سیاسی تقریر کی ہے جبکہ سچ یہ ہے کہ نیب سیاسی انجینئرنگ کا ہتھیار ہے۔ اس طرح صوبائی کارڈ استعمال کرنے کا الزام بھی سیاسی ایجنڈا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک صوبے کو نشانہ بنانے پر سوال تو اٹھیں گے اور یہ بھی پوچھا جائے گا کہ خیبرپختونخواہ میں احتساب کی لانڈری کیوں بند ہے؟ سید نیر بخاری نے کہا کہ احتساب سے انکار نہیں مگر احتساب کی آڑ میں انتقام سے اختلاف ہے۔ انہوں نے کہا کہ چیئرمین نیب ذرا علیمہ خان کو بھی طلب کرکے دکھائیں اور ان سے آمدنی کا ذریعہ اور بیرون ملک اربوں کی پراپرٹی کا بھی پوچھ کر دکھائیں۔ انہوں نے کہا کہ پلی بارگینگ تاوان حاصل کرنے کا دوسرا نام ہے۔ سید نیر بخاری نے کہا کہ نیب اپنی ساکھ کھو چکا ہے اب ہر کوئی مان رہا ہے کہ نیب اور ملکی معیشت ایک ساتھ نہیں چل سکتے۔