کسی کو قانون کو ہاتھ میں لینے کی اجازت نہ دی جائے، پیپلزپارٹی خواتین کے حقوق کی پاسداری کا عزم رکھتی ہے،سیکرٹری جنرل فرحت اللہ بابر 

سلام آباد: پاکستان پیپلزپارٹی نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ خواتین کے عالمی دن کے موقع پر خواتین کے مارچ کی حفاظت کیلئے اقدامات کرے اور ان کے تحفظ کو یقینی بنائے۔ اس کے ساتھ ساتھ کسی کو قانون کو ہاتھ میں لینے کی اجازت نہ دے۔ ایک بیان میں پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمنٹرینز کے سیکرٹری جنرل فرحت اللہ بابر نے کہا کہ آئین پاکستان کسی کو بھی کسی بھی تنظیم سے منسلک ہونے کی اجازت دیتا ہے اور کوئی بھی کسی کو دھمکیاں نہیں دے سکتا۔ یہ افسوسناک بات ہے کہ بہت سارے وہ لوگ جو آئین کی پاسداری کا دعویٰ کرتے ہیں وہ بھی خواتین کو پرامن مارچ کو روکنے کیلئے ان کے خلاف طاقت کے استعمال کی بات کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی خواتین کے حقوق کی پاسداری کا عزم رکھتی ہے اور ان کے اس حق کی حمایت کرتی ہے کہ وہ خواتین کے عالمی دن کے موقع پر پرامن مارچ کریں۔ پاکستان نے خواتین کے خلاف تمام امتیازی سلوک کے خاتمہ کے عالمی معاہدہ پر دستخط کر رکھے ہیں خواتین اور خواتین کی تنظیمیں اس بات کا حق رکھتی ہیں کہ وہ اپنے خلاف امتیازی سلوک کے خلاف مارچ کریں کیونکہ پاکستان نے اس ضمن میں عالمی کنونشن پر دستخظ کیے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ انتہائی افسوسناک ہے کہ گزشتہ ایک سال سے خواتین کا کمیشن بے عمل پڑا ہے، انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ جلد از جلد سے متحرک کیا جائے کیونکہ اس کی بے عملی کی وجہ سے کچھ عناصر کو یہ ہمت ہوئی کہ وہ خواتین کو دھمکیاں دے رہے ہیں، انہوں نے خواتین کے مارچ کو مکمل تحفظ دینے کا مطالبہ کیا۔