کراچی/اسلام آباد ( 20 جون 2020 ) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ احساس و ویژن سے محروم حکمرانوں کی موجودگی میں آج کرونا وائرس کی وباء، ٹدی دل کے حملوں، مہنگائی، بے روزگاری اور قومی معیشت کی شرح نمو میں رکارڈ کمی سمیت ملک کو درپیش دیگر اندرونی و بیرونی چیلینجز کے دوران ہر پاکستانی شہید محترمہ بینظیر بھٹو کی مدبرانہ قیادت کی کمی کو شدت سے محسوس کر رہا ہے۔ غیرمعمولی مشکل حالات و چیلنجز ہی قیادت کی کسوٹی ہوتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سابق وزیراعظم شہید محترمہ بینظیر بھٹو کی 67 ویں سالگرہ کے موقعے پر جاری کردہ اپنے پیغام میں کیا ہے۔ پی پی پی چیئرمین نے مزید کہا کہ شہید محترمہ بینظیر بھٹو نے بطور سیاسی رہنما و ملک کی منتخب وزیراعظم، پاکستان کی سیاست، معیشت اور معاشرے پر مثبت، گہرے اور بیشمار اثرات و نقوش چھوڑے ہیں۔ 1973ع کے آئین میں سے آمریتی الائشوں کو نکال کر اس کی اصل شکل میں بحالی، پارلیمان کو اختیارات کی منتقلی، صوبوں کو خودمختیاری، این ایف سی ایوارڈ، خیبرپختونخوا اور گلگت بلتستان کے عوام کو شناخت، عورتوں اور اقلیتوں سمیت پسماندہ و کمزور گروہ و طبقات کو ہر فورم پر نمائندگی، بھوک و غربت کے خاتمے کے لیئے پروگرامز، عوام کی ترقی و بھبود کے منصوبے اور دہشتگردی و انتھاپسندی کی بیخ کنی سمیت دیگر بیشمار ایسے اقدامات ہیں، جو درحقیقت شہید محترمہ بینظیر بھٹو کی زندگی بھر کی جدوجہد کا ثمر ہیں۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ شہید محترمہ بینظیر بھٹو نے اپنے عظیم والد سمیت دو بھائیوں کی قربانیوں کے باوجود عوامی حقوق کی جدوجہد جاری رکھی اور اپنے دور کے دو ظالم و جابر آمروں کو پرامن سیاسی جدوجہد کے ذریعے انہیں ہمیشہ کے لیئے سیاسی زوال کی قبروں میں دفن کیا۔ انہوں نے کہا کہ شہید محترمہ بینظیر بھٹو کی سوچ و فکر آج بھی عوام کو ریوڑ سمجھنے والے استحصالی عناصر کے مذموم عناصر کے آگے اصل مزاحمت ہے۔ وہ قوتین جو کل اُس نہتی لڑکی سے ڈرتے تھے، آج اس کے نام سے لرزتے ہیں۔ یہی وہ چند لوگ اور زوال پذیر سوچ ہے جو آئے روز شہید محترمہ بینظیر بھٹو کا نام اداروں اور عمارتوں سے ہٹانے میں لگے ہوتے ہیں، باوجود اس کے کہ انہیں معلوم ہے کہ وہ شہید ذوالفقار علی بھٹو کی طرح شہید بی بی کو بھی 22 کروڑ عوام اور ان کی آئںدہ نسلوں کے دلوں سے کبھی مٹا نہ سکیں گے۔ پی پی پی چیئرمین نے کہا کہ گو کہ شہید محترمہ بینظیر بھٹو جسمانی طور آج ہم میں موجود نہیں ہیں، لیکن ان کا فکر و فلسفہ پاکستان کو درپیش مسائل کی کنجی اور روشن مستقبل کی جانب جانے والا واحد راستہ ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی اپنی شہید چیئرپرسن کے مشن پر سختی سے کاربند رہتے ہوئے ملک میں جمہوریت کو مضبوط، آئین و قانون کی حکمرانی، انسانی حقوق کی پاسداری، بھوک و غربت کے خاتمے اور مساوات پر مبنی معاشرے کے قیام کے لیئے جدوجہد جاری رکھے گی اور اس کے لیئے کسی بھی قسم کی قربانی دینے سے دریغ نہیں کرے گی۔