اسلام آباد( 30 ستمبر 2020) پاکستان پیپلز پارٹی کی مرکزی ڈپٹی سیکریٹری اطلاعات پلوشہ خان نے نیب کی جانب سے سابق وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ کی بار بار طلبی کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ نیب سیاسی بلیک میلنگ اور انتقامی کارروائیوں میں حکومت کی سہولت کار بننے سے گریز کرے۔ اپنے ایک بیان میں پلوشہ خان نے کہاکہ سید قائم علی شاہ مسلسل قانونی جنگ لڑ رہے ہیں، نیب تاحال ان کے خلاف کچھ نہیں ثابت کر سکا مگر بار بار طلب کرکے انہیں ہراساں کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آصف علی زرداری، مسز فریال تالپور، سید یوسف رضا گیلانی کے خلاف تمام ریفرنس بدنیتی پر مبنی ہیں۔ پارٹی کے سینئر رہنما سید خورشید احمد شاہ بغیر کسی جرم کے سزا کاٹ رہے ہیں اور ان کے حلقے کے عوام کو بھی پارلیمنٹ میں نمائندگی سے محروم رکھا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم کی وجہ سے سلیکٹڈ وزیراعظم اور ان کی بے نامی حکومت بوکھلاہٹ کا شکار ہوگئی ہے۔ نیب کے ذریعے صرف اپوزیشن رہنماﺅں کو ڈرایا جا رہا ہے جبکہ کرپشن اسکینڈلز کے مرکزی کردار حکومت میں بیٹھے ہوئے ہیں۔