بلاول بھٹو زرداری چیئرمین پیپلز پارٹی کے ترجمان سینیٹر مصطفیٰ نواز کھوکھرنے کہا ہے کہ وزیرداخلہ بریگیڈئیر اعجاز شاہ کا بیان نیشنل ایکشن پلان کی خلاف ورزری ہے۔ سیاسی مخالفین کو طالبان سے ڈرا کر وزیرداخلہ نے نیشنل ایکشن پلان کے بکھئے ادھیڑ دئیے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیر داخلہ اور دیگر وزرا کے غیرذمہ دارانہ بیانات ایف اے ٹی ایف میں پاکستان کیلئے مشکلات کھڑی کر دیں گے۔ دنیا ہم پر جو الزامات عائد کرتی ہے وزرا اپنے عمل سے انہی الزامات کی تصدیق اور تائید کر دیتے ہیں۔ سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر نے کہا کہ اب یہ ثابت ہو گیا کہ محترمہ بینظیر بھٹو شہید نے اپنے قاتلوں میں اعجاز شاہ کا نام درست لیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اسی دوغلی پالیسی اور عمل کی وجہ سے دنیا ہمارے ہزاروں شہریوں اور جوانوں کی قربانیاں تک تسلیم کرنے کو تیار نہیں ہے ۔اعجاز شاہ اپنے بیان پر قوم، پی پی پی ، اے این پی اور دیگر جماعتوں کے شہدا اور ان کے ورثا سے معافی مانگے۔ چیئرمین پی پی پی کے ترجمان نے سوال کیا کہ غداری کے سرٹیفکیٹ جاری کرنے والے تمام “محب وطن” اعجاز شاہ کے بیان پر کیوں خاموش ہیں۔ غداری کا منحوس اور فرسودہ الزام لگانے والوں کی حقیقت قوم جان چکی ہے۔ سینیٹر مصطفی نواز نے کہا کہ اب یہ چورن نہیں بکے گا، قوم اعجاز شاہ اور ان کے سرپرست سلیکٹڈ کا محاصبہ کرے گی۔