اسلام آباد(30نومبر 2020) محترمہ آصفہ بھٹو زرداری نے قوم کو پاکستان پیپلزپارٹی کے 53ویں یوم تاسیس کے موقع پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا ہے کہ سلیکٹڈ حکومت کو یہ غلط فہمی ہے کہ اگر پارٹی کے مرد کارکنوں کو گرفتار کر لیا گیا تو پارٹی ڈر جائے گی لیکن یہ بات یقینی ہے کہ پارٹی کی ہر عورت ملک میں جمہوریت کی جدوجہد کے لئے حصہ لینے کے لئے تیار ہے۔ محترمہ آصفہ بھٹو زرداری نے یہ بات پارٹی کے یوم تاسیس کے موقع پر ملتان میں پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ آج ملتان میں اس سلیکٹڈ حکومت کے ظلم کے باوجود اتنی بڑی تعداد نے جمع ہو کر اس سلیکٹڈ حکومت کے خلاف فیصلہ دے دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ شہید ذوالفقار علی بھٹو نے جمہوری اور فلاحی ریاست کی بنیاد رکھی تھی۔ شہید محترمہ بینظیر بھٹو نے اس مشن کو آگے بڑھایا اور صدر آصف علی زرداری نے اٹھارہویں ترمیم اور بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کومتعارف کر کے اس جمہوری اور فلاحی ریاست کے نظریے کو مستحکم کیا۔ انہوں نے ان تمام کارکنوں کو سلام پیش کیا جنہوں نے شہید ذوالفقار علی بھٹو کے مشن کو پورا کرنے کے لئے بے انتہا قربانیاں دیں یہاں تک کہ اپنی جانوں کا نذرانہ بھی پیش کیا۔ آصفہ بھٹو زرداری نے کہا کہ وہ اس جلسے میں اس لئے شرکت کر رہی ہیں کہ ان کے بھائی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کورونا ٹیسٹ مثبت آیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جس طرح عوام نے مادرجمہوریت بیگم نصرت بھٹو اور دختر مشرق شہید محترمہ بینظیر بھٹو کی حمایت کی اسی طرح اب وہ بلاول بھٹو زرداری کی حمایت کریں گے۔ انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ جمہوریت کی اس جدوجہد میں وہ بلاول بھٹو زرداری اور پاکستان کے عوام کے ساتھ رہیں گی۔ انہوں نے کہا کہ ہم سب مل کر پاکستان پیپلزپارٹی کے بانی شہید ذوالفقار علی بھٹو کا مشن پورا کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہم پاکستان کو عمران خان کی سلیکٹڈ حکومت سے بچائیں گے۔ آصفہ بھٹو زرداری نے “جئے بھٹو، آﺅ بلاول بھٹو، ہم تمہارے ساتھ ہیں” کے نعرے بھی لگوائے جس کا عوام نے پر جوش طریقے سے جواب دیا۔