اسلام آباد(12 جنوری2021) پاکستان پیپلزپارٹی کے مرکزی سیکریٹری اطلاعات فیصل کریم کنڈی نے سپریم کورٹ سے استدعا کی ہے کہ شہید ذوالفقار علی بھٹو کیس کے حوالے سے صدر پاکستان کی طرف سے بھیجے گئے ریفرنس کی فوری سماعت کرے۔ یہ ریفرنس گزشتہ آٹھ سال سے سماعت کا منتظر ہے۔ اپنے ایک بیان میں پیپلزپارٹی کے سیکریٹری اطلاعات نے کہا کہ سینیٹ الیکشن کے حوالے سے بھیجے گئے ریفرنس سے قبل بھٹو کیس ریفرنس کی جلد سماعت کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ آٹھ سال قبل صدر پاکستان نے سپریم کورٹ کو بھٹو کیس کے متعلق رائے کے لئے سپریم کورٹ کو ریفرنس بھیجا تھا اس دوران سپریم کورٹ کے تین چیف جسٹس صاحبان ریٹائر ہو چکے مگر اس ریفرنس کا فیصلہ نہیں ہوا۔ فیصل کریم کنڈی نے کہا کہ شہید ذوالفقار علی بھٹو کو پھانسی کی سزا سنانے والے جج جسٹس ریٹائرڈ نسیم حسن شاہ نے ٹی وی پر اقرار کیا تھا کہ بھٹو صاحب کو پھانسی کی سزا غلط تھی۔ جسٹس ریٹائرڈ نسیم حسن شاہ لاہور ہائی کورٹ کے اس بنچ میں شامل تھے اور ان کا شمار ان ججوں میں ہوتا ہے جنہوں نے بھٹو صاحب کو پھانسی کی سزا سنائی تھی۔ فیصل کریم کنڈی نے کہا کہ سپریم کورٹ سمیت دیگر اعلیٰ عدالتوں میں بھی بھٹو کیس کا حوالہ تسلیم نہیں کیا جاتا۔ انہوں نے کہا کہ قوم بھٹو ریفرنس کا سپریم کورٹ کی رائے کی منتظر ہے عدالت عظمیٰ سے درخواست ہے کہ بھٹو ریفرنس کی فوری سماعت کی جائے۔