کراچی (04 نومبر 2017) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے عظیم صوفی شاعر شاہ عبداللطیف بھٹائیؒ کے پیغامِ امن و محبت کو دنیا بھر میں عام کرنے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ شاہ عبداللطیف بھٹائی کے 274 ویں عرس کی مناسبت سے جاری کردہ اپنے پیغام میں پی پی پی چیئرمین نے کہا کہ سندہ صوفیاء کی سرزمین ہے اور ہمیشہ رہے گی۔ بلاول بھٹو زرداری نے اپنی پارٹی کو جدید دور میں صوفی افکار کا تسلسل قرار دیتے ہوئے کہا کہ پیپلز پارٹی نے مظلوموں کے حقوق کی جدوجہد میں اپنے مقبول ترین قائدین کی قربانیاں دی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شاہ عبداللطیف بھٹائیؒ ایک عظیم فلسفی بھی تھے، جنہوں نے معاشرے میں بھائیچارے اور امن و آشتی کے پیغام کو فروغ دیا۔ پی پی پی چیئرمین نے کہا کہ گو کہ دہشتگردی سرزمیںِ صوفیاء پر حملہ آور ہے اور اسے شکست سے ہمکنار کرنا چاہتی ہے لیکن ناکامی ہی اس کا مقدر ہے کیوں کہ تصوف وادی مہران کے بنیادوں میں بہت گہرائی سے موجود ہے۔
ڪراچي (04 نومبر 2017) پاڪستان پيپلز پارٽي جي چيئرمين بلاول ڀٽو زرداري عظيم صوفي شاعر شاهه عبداللطيف ڀٽائي رحه جي امن ۽ محبت جي پيغام کي سڄي دنيا ۾ پکيڙڻ جي ضرورت تي زور ڏنو آهي. شاهه عبداللطيف ڀٽائي رحه جي 274 هين عرس جي موقعي تي پنهنجي جاري ڪيل بيان ۾ پي پي پي چيئرمين چيو ته سنڌ صوفين جي سرزمين آهي ۽ سدائين رهندي. بلاول ڀٽو زرداري پنهنجي پارٽي کي جديد دور ۾ صوفي فڪر جو تسلسل قرار ڏيندي چيو ته پيپلز پارٽي مظلومن جي حقن واري جاکوڙ دوارن پنهنجن مقبول ترين اڳواڻن جون قربانيون ڏنيون آهن. هن چيو ته شاهه عبداللطيف ڀٽائي رحه هڪ عظيم فلسفي هو، جنهن سماج ۾ ڀائيچاري ۽ شانتي کي هٿي وٺرائي. پي پي پي چيئرمين چيو ته جيتوڻيڪ صوفين جي سرزمين تي دهشتگردي حملي آور آهي ۽ ان کي هارائڻ چاهي ٿي پر ائين نه ٿيندو ڇاڪاڻ ته مهراڻ جي وادي جي بنيادن ۾ تصوف تمام گهرائي سان موجود آهي.