Archive for June, 2018

سابق صدر پاکستان اور پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرینز کے صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ پارٹی کارکن باہمی اتحاد اور جذبے سے انتخابات میں نامزد پارٹی امیدواروں کی کامیابی کے لئے کام

سابق صدر پاکستان اور پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرینز کے صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ پارٹی کارکن باہمی اتحاد اور جذبے سے انتخابات میں نامزد پارٹی امیدواروں کی کامیابی کے لئے کام کریں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے مخالفین کے پاس محض الزام تراشی، جھوٹا پروپیگنڈا، کھوکھلے نعرے اور حقائق سے خالی دعوے ہیں جبکہ پیپلزپارٹی نے ملک اور عوام کی خدمت کی ہے۔ ادارے بنائے ہیں اور عوام کی فلاح وبہبود کے لئے کام کیا ہے۔ منگل کے روز بلاول ہاﺅس لاہور میں حلقہ 57 کے پیپلزپارٹی کے کارکنوں سے اور پارٹی ٹکٹ کے لئے امیدواروں سے خطاب کرتے ہوئے آصف علی زرداری نے کہا کہ پیپلزپارٹی کی قیادت نے عوام کے ساتھ جو عہد کئے وہ تختہ دار پر جا کر بھی نبھائے اور سرعام جان کی قربانی دے کر بھی نبھائے۔ انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی کے مخالفین نے دھاندلی اور چور دروازے سے اقتدار میں آکر عوام کو انتقام کا نشانہ بنایا جبکہ پاکستان پیپلزپارٹی عوام کی طاقت سے اقتدار میں آکر ملک کی خدمت کرتی ہے۔ آصف علی زرداری نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی کا ہر کارکن عوام کی خدمت کا جذبہ رکھتا ہے۔ا نہوں نے کہا کہ محترمہ بینظیر بھٹو شہید کا فلسفہ ہمارے لئے مشعل راہ ہے۔ پیپلزپارٹی کل بھی کچلے ہوئے طبقات کی واحد نمائندہ پارٹی تھی اور آج بھی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہماری جدوجہد سماجی انصاف اور برابری کے لئے ہے۔ ہم ایسے معاشرے کے لئے جدوجہد کر رہے ہیں جس معاشرے میں تمام طبقات کے ساتھ انصاف اور برابری کے اصول ہوں۔ آصف علی زرداری سے جمعیت علمائے اسلام کے رہنما مولانا ابوالخیر زیبر نے بھی بلاول ہاﺅس لاہور میں ملاقات کرکے ملک کی موجودہ سیاسی صورتھال اور انتخابات کے حوالے سے تبادلیہ خیال کیا۔

 

 

 

سابق صدر پاکستان اور پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمنٹیرینز کے صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ تاریخ اور عوام کے فیصلے کبھی غلط نہیں ہوتے

سابق صدر پاکستان اور پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمنٹیرینز کے صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ تاریخ اور عوام کے فیصلے کبھی غلط نہیں ہوتے۔ تاریخ نے شہید ذوالفقار علی بھٹو اور محترمہ بینظیر بھٹو شہید کو ہیرو قرار دیا جبکہ عوام کو جب بھی آزادانہ اظہار رائے کا اختیار ملا تو عوام نے پاکستان پیپلزپارٹی کے حق میں فیصلہ دیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی عوام کی طاقت سے انتخابات لڑے گی۔ تیر پر ٹھپہ لگنے والا ہر ووٹ بلاول بھٹوزرداری کا ہوگا۔ پیر کے روز بلاول ہاﺅس لاہور میں پی ٹی آئی کے رہنما اور حلقہ NA-86 سے فخر عمر لالیکا نے صدر آصف علی زرداری سے ملاقات کرکے پاکستان پیپلزپارٹی میں شمولیت کا اعلان کیا۔ اس موقع پر پیپلزپارٹی کے وسطی پنجاب کے جنرل سیکریٹری چوہدری منظور، عامر فدا پراچہ اور فیصل گوندل بھی موجود تھے۔ فخر عمر لالیکا نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی واحد سیاسی پارٹی ہے جو عوام سے مخلص ہے اور جس کی قیادت نے عوام کی خاطر اپنی جانیں قربان کی ہیں۔ سابق صدر آصف علی زرداری نے فخر عمر لالیکا کی پاکستان پیپلز پارٹی میں شمولیت کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی عوام کی خدمت پر یقین رکھتی ہے اس لئے قافلے میں شامل ہونے والوں کا خلوص دل سے خیرمقدم کرتی ہے۔ آصف علی زرداری نے فخر عمر لالیکا کو ہدایت کی کہ وہ پاکستان پیپلز پارٹی کو کامیابی کرانے کےلئے اپنا کردار ادا کریں۔

 

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے ترجمان سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر نے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے اثاثوں کے متعلق وضاحت کرتے ہوئے کہا ہے

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے ترجمان سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر نے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے اثاثوں کے متعلق وضاحت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بلاول بھٹو کے تمام اثاثے موروثی ہیں۔ بلاول ہاﺅس کراچی کی مالیت 1990 کے اوائل کی قیمت پر ظاہر کی گئی ہے کیونکہ اس وقت گھر کی مالیت 30لاکھ تھی۔ مصطفی نواز کھوکھر نے کہا کہ ٹیکس قوانین کے تحت کسی بھی اثاثے کی مالیت وہی لکھی جاتی ہے جو کسی کے نام پر انتقال کے وقت تھی۔ مصطفی نواز کھوکھر نے کہا کہ بلاول بھٹو زرداری نے کاغذات نامزدگی میں تین سال کے ٹیکس ریٹرن بھی جمع کرائے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بلاول بھٹو زرداری کے سامنے 70 سے زائد امیدواروں نے کاغذات جمع کرائے جس میں پی ٹی آئی، مسلم لیگ(ن)، جے یو آئی، جماعت اسلامی اور ایم کیو ایم سمیت کسی جماعت کے امیدوار نے اعتراض دائر نہیں کیا اور نہ ہی کاغذات پر کوئی قانونی اعتراض اٹھایا۔ مصطفی نواز کھوکھر نے کہا کہ چیئرمین بلاول بھٹو زرداری تمام قوانین پر من و عن عمل کر رہے ہیں۔

 

پاکستان پیپلز پارٹی کے سیکریٹری جنرل سید نیر حسین بخاری نے محترمہ بینظیر بھٹو شہید کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے

پاکستان پیپلز پارٹی کے سیکریٹری جنرل سید نیر حسین بخاری نے محترمہ بینظیر بھٹو شہید کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ محترمہ بینظیر بھٹو کی فلاسفی پر عمل کرنے سے جمہوریت مستحکم اور ملکی سلامتی یقینی ہوگی کیونکہ محترمہ بینظیر بھٹو شہید نے اپنی زندگی میں قوم کو سچائی کا راستہ دکھاتے ہوئے بتا دیا تھا کہ ملک کے دوست کون اور دشمن کون ہیں۔وہ پیپلز پارٹی کے مرکزی سیکریٹریٹ میں محترمہ بینظیر بھٹو شہید کی سالگرہ کی تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔ اس موقع پر سابق رکن قومی اسمبلی فوزیہ حبیب، سابق صدر کے ترجمان عامر فدا پراچہ، راجہ عمران اشرف، راجہ شکیل عباسی، راجہ امجد، ملک حاکمین خان، چوہدری افتخار، نعیم کیانی، سمیرا گل، راجہ مختار عباسی، سہیل رومی، ندا نذیر سمیت کارکنوں کی بڑی تعداد موجود تھی۔ نیر حسین بخاری نے کہا کہ آنے والے الیکشن اہم ہیں کیونکہ اس وقت نواز شریف کی کھوکھلی خارجہ پالیسی نے عالمی سطح پر پاکستان کو نقصان پہنچایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آصف علی زرداری نے محترمہ بینظیر بھٹو شہید کے نقش قدم پر چل کر بہترین سفارتکاری کی جس سے پاکستان کے دوستوں میں اضافہ ہوا۔ نیر بخاری نے کہا کہ کارکن بھرپور طریقے سے میدان میں نکل آئیں تاکہ محترمہ بینظیر بھٹو شہید کا پاکستان بنا کر ترقی یافتہ اور مہذب معاشرہ قائم ہو سکے۔

سابق صدر پاکستان اور پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمنٹیرینز کے صدر آصف علی زرداری نے شہید محترمہ بینظیر بھٹو کی 65ویں سالگرہ کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے

سابق صدر پاکستان اور پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمنٹیرینز کے صدر آصف علی زرداری نے شہید محترمہ بینظیر بھٹو کی 65ویں سالگرہ کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ پارٹی خواتین کے حقوق کے لئے جدوجہد جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کرتی ہے اور خواتین کے حقوق مذہب کے نام پر غصب کرنے کو مسترد کرتی ہے۔ اپنے پیغام میں سابق صدر نے کہا کہ آج دو مرتبہ منتخب وزیراعظم، خواتین کے حقوق کی علمبردار، مسلم دنیا کی پہلی خاتون وزیراعظم شہید محترمہ بینظیر بھٹوکی 65ویں سالگرہ ہے۔ پارٹی اس عزم کا اعادہ کرتی ہے کہ انتہاپسندوں، مردوں کی سبقت پر یقین رکھنے والوں اور مذہبی ٹھیکیداروں کی مخالفت کرتی رہے گی جو خواتین کو آگے بڑھنے اور ترقی کرنے سے روکنا چاہتے ہیں۔ اس موقع پر ہم پاکستان کی تمام خواتین کو یقین رکھنے والوں اور مذہبی ٹھیکداروں کی مخالفت کرتی رہے گی جو خواتین کو آگے بڑھنے اور ترقی کرنے سے روکنا چاہتے ہیں۔ اس موقع پر ہم پاکستان کی تمام خواتین کو یقین دلاتے ہیں کہ انہیں ہر قسم کے استحصال، امتیازی سلوک اور تشدد سے نجات دلانے کی ہر جدوجہد میں ان کے ساتھ ہیں اور ان کی حمایت کرتے رہیں گے۔ سابق صدر نے اس جدوجہد میں شریک تمام بہادر مرد اور خواتین کو خراج تحسین اور خراج عقیدت پیش کیا۔ انہوں نے صنفی برابری کے اصول پر کاربند رہنے کا عزم بھی کیا۔ سابق صدر نے کہا کہ شہید محترمہ بینظیر بھٹو کی سالگرہ کے موقع پر ہم ان تمام لوگوں کو زبردست خراج عقیدت اور خراج تحسین پیش کرتے ہیں جنہوں نے شہید محترمہ بینظیر بھٹو کے نقشِ قدم پر چلتے ہوئے جمہوری جدوجہد اور عسکریت پسندی اور شدت پسند عناصر سے لڑتے ہوئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا اور صعوبتیں برداشت کیں۔

 

 

سابق صدر آصف علی زرداری سے نواب شاہ کی تاجر برادری اور حلقہ این اے 213 نواب شاہ سے تعلق رکھنے والے پارٹی کارکنوں نے زرداری ہاؤس میں ملاقات کی اس موقع پر تاجر برادری

سابق صدر آصف علی زرداری سے نواب شاہ کی تاجر برادری اور حلقہ این اے 213 نواب شاہ سے تعلق رکھنے والے پارٹی کارکنوں نے زرداری ہاؤس میں ملاقات کی اس موقع پر تاجر برادری نے سابق صدر کو۔پگ پہناکر ان کی مکمل حمایت کا اعلان کیا۔ اس موقع پر سابق رکن قومی ڈاکٹر عذرا فضل پیچوھو بھی موجود تھیں ۔ آصف علی زرداری سے حلقہ این اے 213 سے تعلق رکھنے والے عہدے داروں اور کارکنوں نے بھی ملاقات کی ۔سابق صدر نے پارٹی کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پارٹی عہدیداروں اور کارکنوں کو انتخابات کے دوران دن رات کام کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی انتخابات عوام کی قوت سے لڑتی ہے اس لیئے انتخابات جیت کر اقتدار میں آنے کے بعد اس کی ترجیج زیادہ سے زیادہ عوام کی خدمت پر مرکوز رہتی ہے۔ انہوں نے گزشتہ وفاقی حکومت نے صوبوں سے نا انصافی اور پورے ملک کے عوام کو مشکلات کا شکار کیا ۔ آصف زرداری نے کہا کہ نواز حکومت نے ملکی معیشت کو تباہ کیا ۔حکومت ہر ماہ پیٹرول کی قیمتوں میں اضافہ کرکے مہنگائی میں اضافہ کرتی رہی ۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی قیادت کو احساس ہے کہ مہنگائی اور بیروزگاری سے عوام پریشان ہیں ۔ آصف زرداری نے کہا کہ پیپلز پارٹی روزگار کے نئے وسائل پیدا کریگی ۔  کسانوں کی خوشحالی کے لیئے موثر اقدام اٹھائے گی ۔.

 

سابق صدرپاکستان اور پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمنٹیرین کے صدر آصف علی زرداری نے سینئر سیاستدان رسول بخش پلیجو کے انتقال پر گہرے رنج و غم اور صدمے کا اظہار کیا ہے۔

سابق صدرپاکستان اور پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمنٹیرین کے صدر آصف علی زرداری نے سینئر سیاستدان رسول بخش پلیجو کے انتقال پر گہرے رنج و غم اور صدمے کا اظہار کیا ہے۔ ایک تعزیتی پیغام میں سابق صدر نے مرحوم رسول بخش پلیجو کی سیاسی جدوجہد اور جمہوریت کے لئے قید و بند کی صعوبتیں برداشت کرنے پر انہیں خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم رسول بخش پلیجونے ادب کی بھی بڑی خدمت کی ۔ آصف علی زرداری نے مرحوم رسول بخش پلیجو کے خاندان اور عوامی تحریک کے کارکنوں سے اظہار تعزیت کرتے ہوئے مرحوم کے لئے جوار رحمت کے لئے دعا کی۔

 

 

 

پاکستان پیپلز پارٹی کی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کے رکن عامر فدا پراچہ نے چیف الیکشن کمشنر کے نام خط میں بیت المال، زکواة و عشر اور بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کے سربراہان کو تبدیل کرنے کا

پاکستان پیپلز پارٹی کی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کے رکن عامر فدا پراچہ نے چیف الیکشن کمشنر کے نام خط میں بیت المال، زکواة و عشر اور بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کے سربراہان کو تبدیل کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ چیف الیکشن کمشنر کے نام خط میں عامر فدا پراچہ نے کہا ہے کہ عام انتخابات 25جولائی کو منعقد ہونے ہیں وفاقی اور صوبائی حکومتیں اپنی مدت پوری کرنے کے بعد ختم ہو چکی ہیںمگر ان کے تعینات کردہ سربراہان ابھی تک ذمے داریاں سرانجام دے رہے ہیں۔ خط میں انہوں کہا کہ نگران حکومتوں کا کردار سابقہ حکومتوں کے اثرات کو زائل کرنا ہوتا ہے تاکہ آنے والے انتخابات پر سابقہ حکومتوں کے اثرات نہ ہوں۔ عامر فدا پراچہ نے چیف الیکشن کمشنر کے نام خط میں لکھا ہے کہ الیکشن کمیشن کی آئینی ذمہ داری ہے کہ اس بات کو یقینی بنائے کہ انتخابات آزادانہ اور شفاف منعقد ہوں۔الیکشن کمیشن نئی تعیناتیوں، تبادلوں اور نئے منصوبے شروع کرنے پر پابندی عائد کر چکا ہے تاکہ شفاف انتخابات کے لئے تمام فریقین کو برابر مواقع دستیاب ہوں۔ انہوں نے خط میں کہا ہے کہ یہ ادارے جو کہ براہِ راست عوام سے متعلق ہیں اور ان کے سربراہان ووٹروں کو اپنی جماعتوں کی حمایت میں حق رائے دہی پر راغب کرنے کے لئے قومی خزانے کا استعمال کر سکتے ہیں اور یہ پری پول ریگنگ کو روکنے اور شفاف انتخابات کے ذریعے جمہوریت قائم کرنے کے عمل کو متاثر کرنے کا باعث بنے گی۔ انہوں خط میں چیف الیکشن کمشنر سے درخواست کی ہے کہ ان محکموں کے سربراہان کو تبدیل کرکے غیرجانبدار شخصیات کو تعینات کیا جائے تاکہ ملک میں آزادانہ، غیرجانبدارانہ اور شفاف انتخابات کو یقین بنایا جا سکے۔

 

 

پاکستان پیپلزپارٹی کے سابق مرکزی سیکریٹری اطلاعات سابق سنیٹر تاج حیدر نے ایک بیان میں کہا ہے کہ چیف جسٹس آف پاکستان کالا باغ ڈیم کے متعلق سماعت کر رہے ہیں۔

پاکستان پیپلزپارٹی کے سابق مرکزی سیکریٹری اطلاعات سابق سنیٹر تاج حیدر نے ایک بیان میں کہا ہے کہ چیف جسٹس آف پاکستان کالا باغ ڈیم کے متعلق سماعت کر رہے ہیں۔ ان کی نظر میں سب سے مقدم مسئلہ یہ ہونا چاہیے کہ کوٹلی سے نیچے پانی کے کم اخراج کی وجہ سے ٹھٹہ اور بدین کا 24 لاکھ ایکڑ رقبہ سمندر برد ہو جائے گا۔ سینیٹر تاج حیدر نے کہا کہ خاص مقدار میں دریا کا پانی سمندر میں جانا چاہیے تاکہ زمین کو سمندری پانی سے بچایا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ 1991 ءکے پانی کے معاہدے میں یہ بات تسلیم کی گئی تھی۔ انہوں نے کہا کہ منگلا اور تربیلا ڈیموں سے دو بڑی نہریں نکالی گئی ہیں جن میں دریائے سندھ کا پانی جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ ڈیلٹا کی زمین تیزی سے سمندر برد ہو رہی ہے ۔ اس سے 2050ءتک سمندر ٹھٹھہ شہر تک آجائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ڈیم کے لئے پانی ضروری ہے لیکن پانی میسر ہی نہیں تاہم اے این جی عباسی کی رپورٹ کے صفحہ 48 میں جو چارٹ دکھایا گیا ہے وہ آنکھیں کھولنے کے لئے کافی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جن پانچ ماہرین نے اضافی پانی دکھایا ہے انہوں نے حال اور مستقبل میں پانی کے استعمال کو مدنظر نہیں رکھا۔ تاج حیدر نے کہا کہ بھارت نے کشن گنگا ڈیم بنا لیا ہے جس کے بعد پانی اور بھی کم ہو گیا ہے۔ کالا باغ ڈیم کی حمایت کر رہے ہیں وہ دراصل بھارت کی جانب سے کشن گنگا ڈیم بنانے کا جواز مہیا کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں زیریں علاقے کے لوگوں کے حقوق کا تحفظ کیا جاتا ہے۔ا نہوں نے کہا کہ سندھ پہلے ہی اس بات پر تیار ہو گیا ہے کہ تربیلا سے اوپر پانی کے ذخائر کے لئے ڈیم بنائے جائیں تاہم پانی اتنا کم ہے کہ بھاشا ڈیم میں بھی دس سالوں میں صرف دوسال پانی میسر ہو سکے گا۔ انہوں نے چیف جسٹس سے درخواست کی کہ وہ ٹھٹھہ اور بدین اضلاع کا دورہ کریں اور خود اپنی آنکھوں سے دیکھیں کہ کس طرح سمندر نے ٹھٹھہ اور بدین کی زمینوں کو کاٹ ڈالا ہے۔

 

 

پاکستان پیپلز پارٹی کے سیکریٹری جنرل سید نیر حسین بخاری کہا ہے کہ شہباز شریف کو چاہیے کہ آصف علی زرداری کے خلاف بیان بازی کی بجائے اپنے اعمال کا حساب دیں۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے سیکریٹری جنرل سید نیر حسین بخاری کہا ہے کہ شہباز شریف کو چاہیے کہ آصف علی زرداری کے خلاف بیان بازی کی بجائے اپنے اعمال کا حساب دیں۔ قوم اس بات کی منتظر ہے کہ شہباز شریف سانحہ ماڈ ل ٹاﺅن کے جرم میں کب قانون کی گرفت میں آتے ہیں اور کب انصاف کے کٹہرے میں کھڑے ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ عمران نیازی گملے میں اگے ہوئے پھو ل ہیں گملے میں ہی سوکھ جائیں گے۔ نیر بخاری نے کہا کہ گملے میں اگائے گئے سیاستدان سیاسی شعور نہیں رکھتے۔ نواز شریف بھی گملے ہوئے اگے ہوئے سیاستدان تھے اس طرح جو لوگ عمران نیازی کو لیڈر مانتے ہیں ان کی سوچ پر رحم آتا ہے۔ نیر حسین بخاری نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی کا ہر کارکن سیاسی شعور رکھتا ہے اور پیپلزپارٹی کا ہر کارکن کی جمہوریت کے لئے جدوجہد کی تاریخ ہے۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ انتخابات عمران نیازی کے آخری انتخابات ہیں۔ اس کے بعد پی ٹی آئی بھی قصہ پارینہ بن جائے گی۔