پاکستان پیپلزپارٹی کے الیکشن مانیٹرنگ کمیٹی کے مرکزی انچارج تاج حیدر نے اس بات پر سخت تشویش کا اظہار کیا ہے کہ 2018ءکے انتخابات میں پارٹی کے جن امیدواروں نے انتخابات میں بدعنوانی کے خلاف قانونی اقدام کیا ہے ان کو دھمکیاں دی جا رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حلقہ NA-249 سے پارٹی کے امیدوار غلام قادر مندوخیل نے پی ٹی آئی کے کامیاب ہونے والے امیدوار کے خلاف سندھ ہائی کورٹ میں اپیل دائر کی ہے کہ پی ٹی آئی کے امیدوار نااہل ہیں اور انہوں نے اپنے کاغذات نامزدگی میں سنجیدہ غلط بیانیاں کی ہیں۔ غلام قادر مندوخیل نے پریزائیڈنگ افسران کے خلاف بھی مقدمات دائر کئے ہیں کہ انہوں نے ان کے پولنگ ایجنٹوں کو یرغمال بنایا اور گنتی کے وقت انہیں کمروں میں بند کر دیا گیا۔ غلام قادر مندوخیل کو مستقل دھمکیاں دی جا رہی ہیں کہ وہ اپنے مقدمات واپس لیں ورنہ انہیں شدید نقصانات پہنچائے جا سکتے ہیں۔ سندھ ہائی کورٹ نے مختلف وفاقی ایجنسیوں کو حکم دیا ہے کہ وہ جیتنے والے امیدوار کی مکمل رپورٹ مہیا کرے۔ تاج حیدر نے اس خدشے کا بھی اظہار کیا کہ یہ ایجنسیاں اپنی رپورٹ میں تاخیر کر سکتی ہیں اور دباﺅ کے تحت غلط رپورٹیں بنا کر پیش کر سکتی ہیں۔ تاج حیدر نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی جمہوریت اور آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کے لئے ڈٹ کر کھڑی ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دھمکیاں پارٹی کو ڈرانے میں ناکام ہوں گی اور پارٹی آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کے لئے جدوجہد کرتی رہے گی۔