پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے عارف علوی کو پاکستان کا صدر منتخب ہونے پر مبارکباد پیش کرتے ہوئے امید ظاہر کی ہے کہ وہ ریاست کے سربراہ کی حیثیت اور وفاق کی علامت کے طور پر آئین کی روح کے مطابق صدر کے فرائض سرانجام دیں گے۔ ایک بیان میں بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی منتخب صدر کو مبارکباد پیش کرتی ہے لیکن اس کے ساتھ ساتھ صدر کی حیثیت سے ان کے کردار پر نظر بھی رکھے گی۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کے لیڈران عمران خان اور عارف علوی نے پارلیمان اور شہری ریاست کے اداروں کی حیثیت کو گھٹایا ہے اور ان سے کہا ہے کہ وہ اپنے ماضی کے کردار سے خود کو دور کریں جس کی وجہ سے پارلیمنٹ کی حیثیت کم ہوئی تھی۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ پارلیمنٹ کو اس کی حیثیت دینے کے لئے ایک پارلیمانی کمیٹی بنائی جائے جو بلاتاخیر اس بات کی تحقیقات کرے کہ 2018ءکے انتخابات میں کیا بدعنوانیاں ہوئی ہیں۔ انہوں نے منتخب صدر کو یادلایا کہ الیکشن کمیشن کی جانب سے اپ لوڈ کئے ہوئے فارم45کے فارنزک آڈٹ کرائے جائیں اور آرٹی ایس سسٹم کے فیل ہونے کی بھی تحقیقات کرائی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ اس معاملے سے زیادہ عرصے تک گریز نہیں کیا جا سکتا۔