کراچی (5 ستمبر 2018) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ یومِ دفاع کو شایانِ شان انداز میں منانا یہی ہے کہ پاکستان کی سرحدوں، نظریئے اور جمہوریت کی حفاظت کے ساتھ ساتھ ان ہم وطنوں اور سپاہیوں کو شاندار خراج عقیدت پیش کیا جائے جہنوں نے قوم کے تحفظ کی خاطر جامِ شہادت نوش کیا۔ یومِ دفاعِ پاکستان کے موقعے پر اپنے پیغام میں پی پی چیئرمین نے کہا کہ انتھاپسندی و عسکریت پسندی بنیادی خطرہ ہیں اور تمام قوم و اداروں کو دفاعِ وطن کی خاطر ایک پیج پر ہونا ہوگا۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ 6 ستمبر 1965ع وہ دن تھا جب شہری و افواج نے اپنے سے زیادہ طاقتور دشمن بھارت کے خلاف جنگ بڑی بھادری سے لڑی، جس نے اسے جوہری پروگرام شروع اور اسے وسیع کرنے پر مجبور کیا۔ انہوں نے نشاندھی کرتے ہوئے کہا کہ یہ شہید ذوالفقار علی بھٹو ہی تھے، جنہوں نے خطے میں بھارت کے جوھری تسلط آمیز ارادوں کو بھانپ لیا تھا اور انہوں نے سکیورٹی ماحول کا توازن برقرار رکھنے کے لیئے جوھری پروگرام کی بنیاد رکھی تاکہ مستقبل میں پاکستان کو ناقابل تسخیر حیثیت حاصل ہو۔ وزیراعظم شہید محترمہ بینظیر بھٹو ملکی دفاع کو مزید مضبوط بنانے کے لیئے بیلسٹک میزائیل ٹیکنالاجی حاصل کی۔ پی پی پی چیئرمین نے کہا کہ پاکستان کے شہید بیٹوں و بیٹیوں کو ہمیشہ یاد رکھا جائیگا، وہ ہماری تاریخ کے ہیرو ہیں، اور انہیں خراج عقیدت پیش کرنے کے لیئے ہم سلام پیش کرتے ہیں۔