سندھ کے صوبائی وزیر مواصلات سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ کراچی میں امن و امان کی صورتحال میں بہتری آئی ہے،سٹریٹ کرائم کی روک تھام کیلئے سیف سٹی منصوبے کا آغاز کرنے جا رہے ہیں، پیپلز پارٹی ہارس ٹریڈنگ پر یقین نہیں رکھتی، تھر کا نقشہ بدل چکا ہے ، تھر میں مفت گندم تقسیم کر رہے ہیں،تھر میں بچوں کی اموات کی شرح ملک سے زیادہ نہیں ہے جبکہ ابھی تک تو تبدیلی نظر نہیں آ رہی صرف یوٹرن نظر آ رہا ہے۔نذیر دھوکی کے ہمراہ اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ٹرانسپورٹ کے متعلقہ منصوبے کو جلد مکمل کرینگے،میٹرو منصوبے پر وفاقی حکومت ماہانہ 8لاکھ روپے سبسڈی دے رہی تھی،ہم نے ٹرانسپورٹ کے منصوبے پر 15فیصد ادائیگی کر رہے تھے جبکہ باقی کی رقم سپانسرز کے ذریعے ادا کی جا رہی تھی،پہلے ٹرانسپورٹرز نے ہمارا ساتھ دینے کا وعدہ کیااور پھر وہ پیچھے ہٹ گئے جس کی وجہ سے یہ منصوبہ تاخیر کا شکار ہوا،ہم پانچ،چھ ماہ کے دوران شہر میں 600بسیں جبکہ دیہی علاقوں میں بھی 600بسیں چلا دینگے۔گرین بس سروس منصوبے کے حوالے سے وزیر اعظم عمران خان کیساتھ میٹنگ ہوئی ہے اور انہوں نے بھی اس منصوبے میں مدد دینے کا وعدہ کیا ہے۔ناصر حسین شاہ نے کہا کہ کراچی میں امن و امان کی صورتحال میں بہتری آئی ہے،سٹریٹ کرائم کی روک تھام کیلئے سیف سٹی منصوبے کا آغاز کرنے جا رہے ہیں،سٹریٹ کرائم میں سزا کم ہونے کی وجہ سے مجرم جلد رہا ہو جاتے ہیں ،اس حوالے سے قانون سازی کر رہے ہیں تاکہ سپیڈی ٹرائلز کے ذریعے زیادہ سزائیں دی جا سکیں۔انہوں نے کہا کہ تھر کا نقشہ بدل چکا ہے ،سڑکیں ،ہسپتال اور موبائل ڈسپنسریاں عام ہیں ،اس صحرائی علاقے میں جلد شادیاں ہونے کی وجہ سے بھی بچوں کی اموات ہوتی ہیں تاہم اس حوالے سے پورے ملک سے تھر کی شرح زیادہ نہیں ہے۔ہم نادرا سے ریکارڈ حاصل کرکے تھر میں مفت گندم تقسیم کر رہے ہیں۔ناصر حسین شاہ نے کہا کہ پیپلز پارٹی ہارس ٹریڈنگ پر یقین نہیں رکھتی،پیپلز پارٹی نے این ایف سی ایوارڈ پاس کیا ،صوبے مضبوط ہونگے تو وفاق مضبوط ہوگا۔انہوں نے کہا کہ ابھی تک تو تبدیلی نظر نہیں آ رہی صرف یوٹرن نظر آرہا ہے۔انہوں نے کہا کہ انسانی اعضا کی سمگلنگ کو بڑھا چڑھا کر پیش کیا جا رہا ہے ،اس میں اتنی حقیقت نہیں ہے