** میڈیا سیل بلاول ہاوَس کے انچارج سریندر ولاسائی کا پارٹی قیادت کے نام ای سی ایل میں شامل کرنے پر ردعمل

** عمران خان اور اس کی ٹیم من و عن گورباچوف کی پیروی میں مصروف ہے

** پاکستان کھپے والوں کے لیئے ای سی ایل اور آئین شکنوں کے لیئے طوطا چشمی ہے

** یہ رسمِ نیا پاکستان ہے، عوامی قیادت و اساتذہ مقید جبکہ آئین شکن و الیکشن چور آزاد

** یہ بھی رسم چلی ہے کہ جمہور، دستور اور وفاقی اکائیوں کا کوئی نہ تذکرہ کرے

** پارلیامان کو بااختیار بنانا، صوبوں کو حقوق دینا، بلوچستان سے معافی مانگنا جرم بن چکا ہے

** کٹھ پتلی وزراء کہتے ہیں کہ جمہوریت کے تذکرے سے ملک کو خطرات لاحق ہوجاتے ہیں

** جعلی خان سے جو سوال کرے گا، اس کے لیئے نیب، ایف آئی اے اور جے آئی ٹی ہے

** جس نے بھی کٹھ پتلیوں کی نااہلی، یوٹرنز اور جھوٹ کو آشکار کیا، اس نے نیب کی دشمنی مول لی

** منگو تنگو معیشت، انتقام اور کٹھ پتلی حکمران، یہ ہے نیا پاکستان؟

** معیشت بربادی کی سونامی میں ڈوب گئی، ملک مہنگائی کی آگ میں جل رہا ہے

** لیکن نیرو خان اپنے محل میں چین کی بانسری بجا رہا ہے

** کٹھ پتلی حکومت کے اطوار آئس ڈرگ کے نشئیوں جیسے ہیں، عوام سے لاتعلق بن چکی

** مہنگائی کی ستائی ہوئی عوام نے کٹھ پتلی حکومت کو تین طلاقیں دے چکی

جاری کردہ

سریندر ولاسائی
انچارج
میڈیا سیل بلاول ھائوس