سابق چیرمین سینٹ اور پاکستان پیپلز پارٹی کے سیکرٹری جنرل سید نیر حسین 
بخاری نے سابق اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی خورشید شاہ کی گرفتاری پر مذمتی 
بیان میں کہا ہے کہ پارٹی کے مرکزی رہنما خورشید شاہ کی گرفتاری دباو ¿ کا 
گھٹیا حربہ ہے۔سلیکٹڈ نیب کا قانون صرف پیپلز پارٹی کے خلاف استعمال ہو رہا 
ہے۔ نیر بخاری نے کہا کہ حتساب کے نام پر انتقام نا منظور ہے ڈٹ کر مقابلہ 
کریں گے۔انہوں نے کہا کہ چیرمین پی پی پی بلاول بھٹو نے آئینی، قومی، 
سیاسی، عوامی معاملات پر اہم اجلاس طلب کر رکھا ہے اور مرکزی رہنما کی 
گرفتاری حکمرانوں کے پیپلز پارٹی قیادت کے ساتھ بغض اور ذاتی عنادکا تسلسل 
ہے۔ نیر بخاری نے مزید کہا کہ سلیکٹڈ نیب حکمران خاندان اور نیب زدگان وزرا 
کے سامنے اپاہج اور اندھا ہے۔ نیر بخاری نے کہا کہ پوری پیپلزپارٹی گرفتار 
کر لی جائے پھر بھی جینا مرنا عوام کے ساتھ رہے گا۔ نیر بخاری نے کہا کہ 
پاکستان پیپلز پارٹی حکمرانوں کی نااہلی اور نالائقی قوم کے سامنے لاتی رہے 
گی۔ انہوں نے کہا کہ پپیلز پارٹی گرفتاریوں سے خوفزدہ ہونے والی پارٹی 
نہیں۔ نیر بخاری نے کہا کہ قومی اسمبلی کے جاری اجلاس کے دوران ممبر قومی 
اسمبلی کی گرفتاری قابل مذمت ہے انہوں نے کہا کہ احتساب کو انتقام میں 
تبدیل کرنے والوں کا انجام قریب ہے۔

-